نواز شریف کو اے پی سی میں خطاب کرنے دیں: وزیرریلوے شیخ رشید کی تجویز

اسلام آباد (ویب ڈیسک)وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے تجویز دیتے ہوئے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم اور مسلم 

 لیگ ن کے قائد میاں نوازشریف کو آل پارٹیز کانفرنس (اے پی سی) میں خطاب کرنے دیں کیونکہ اس کانفرنس میں کوئی بڑا فیصلہ نہیں جا رہا۔
ایک انٹرویومیں وفاقی وزیر ریلوے نے کہا کہ منی لانڈرنگ میں ملوث بھگوڑوں کی تقریریں دکھانے کا حامی ہوں، اصل فیصلہ حکومت کا ہو گا۔ انہوںنے کہاکہ نواز شریف کو باہر بھیجنے کا حامی تھا، سمجھتا ہوں جوباہرجانا چاہتا ہے جانے دیا جائے،کرپٹ لوگ ہمیں ذلیل خوار کر گئے، سابق وزیراعظم کو کہنا چاہیے پاکستانیوں پارک لین کے فلیٹ آپ کے پیسے لوٹ کربنائے۔بات کو جاری رکھتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کسی نے اے پی سی کونہیں روکا، اتوار کو پتا چلے گا اے پی سی یا اے بی سی ہے،نوازشریف اگرپہلے اسمبلیوں سے نکلیں گے توپھرسمجھوں گا لڑائی شروع ہوگئی۔شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ کرپٹ سیاست دانوں نے جتنا لوٹنا تھا لوٹ چکے، سیاست دان کوسیاست کی خارش ہوتی رہتی ہے ، اسمبلیوں سے استعفے دیئے بغیرٹانگیں نیچے یا اوپرکرلیں،کچھ نہیں ہوگا۔
مولانا فضل الرحمان میرے پیر بھائی اورشہبازشریف کا میری پارٹی سے تعلق ہے۔انہوں نے پیشنگوئی کرتے ہوئے کہا کہ آل پارٹیز کانفرنس میں پیپلز پارٹی کے شریک چیئر مین آصف علی زرداری کا موقف سافٹ ہوگا،ن لیگ اور مولانا فضل الرحمان ایک پیج پرہونگے، دونوں فریقین تحریک چلا لیں کچھ نہیں ہو گا۔وفاقی وزیر ریلوے نے کہا کہ پاکستان کے گرد گھیرا تنگ کیا جارہا ہے، فیٹف قانون سازی ہوگئی اب ان سے کوئی رعایت نہیں ہوگی۔ وزیراعظم عمران خان کوروناوائرس، بھارت کی جنگ، فیٹف سے نکل گیا ہے،فیٹف قانون سازی،ادارے بھی چاہتے تھے کہ درمیانی راستہ نکالا جائے، عمران خان ڈٹا رہا۔شیخ رشید نے کہا کہ متحدہ بانی بھی عدالتوں کومطلوب اوربھگوڑا ہے،لندن تمام بھگوڑوں کا ہیڈکوارٹرہے،متحدہ بانی،نوازشریف،اسحاق ڈار،سلمان شہبازبھگوڑے ہیں، اگرنوازشریف میں ملک کے لیے اگردرد ہے توواپسی کا اعلان کرے،برطانوی حکومت سے تمام بھگوڑوں کی واپسی کا مطالبہ کرنا چاہیے۔