کراچی سےلاہور کا سفر/ بائیکر نامہ

احمد علی جوہر

یوں توانسان فطری طور پر ذوق سفر سے معمور ہوتا ہے۔ سفر مشاہدات و تجربات کےعلاوہ علمی و ادبی، تاریخی اور جغرافیائی حالات و واقعات کےساتھ ساتھ انسان کے اپنے

جذبات و احساسات سے بھی مزین ہوتا ہے۔
یکم اکتوبر2021کو اطلاع ملی کہ جماعت اسلامی ضلع شرقی کی مرکزی تربیت گاہ 25,26,27اکتوبر کو منصورہ، لاہور میں منعقد ہو رہی ہے۔یہ سننا تھا کہ مارچ 2021کے سولوبائیک ٹوور(کراچی تا اسلام آباداور واپسی)کی یادیں تازہ ہوگئیں۔اس سفر کے بعد نیت کی تھی کہ مرکزی تربیت گاہ ہوگی تو موٹرسائیکل پر جائیں گے۔گھر والوں اور احباب کو کہا کہ لاہوربذریعہ موٹرسائیکل جاﺅں گا تو انہوں نے مخالفت کی کہ ایک بار جا چکے ہو، اب ٹرین سے جاﺅ۔ بہرحال ارادہ پختہ تھا تو تیاری جاری رکھی۔پلان کیا کہ 23تاریخ کی صبح سفر کا آغاز ہوگا۔ رات کو صادق آباد قیام ہوگا اور 24تاریخ کی رات 10:00بجے تک لاہور پہنچوں گا۔واپسی کے سفرکے لئے 28تاریخ کی صبح لاہور سے نکلوں گا،رات صادق آباد میں قیام ،29تاریخ کی شام مغرب سے قبل کراچی پہنچ جاﺅں گا۔ 21اکتوبر کی رات اپنے مکینک کو دکھائی کہ لمبے سفر پر جانا ہے۔اس نے چیک کرکے کہا کہ ایکسلیٹر وائر بدل دیں، باقی بائیک اوکے ہے۔
تئیس اکتوبر کی صبح 6:40بجے اپنے گھر سے سفر کا آغاز کیا۔7:00بجے موٹروے ٹول پلازہ پہنچا۔موٹروے پر بائیک کی رفتار 90سے 105تک رکھی۔نوری آباد کے پاس ایک پیٹرول پمپ پر چند منٹ کے ریسٹ کے لئے جب رکا تو وہاں ایک پولیس موبائل کھڑی تھی۔وہاں سے نکلنے لگا تو موبائل والوں نے اشارہ سے بلایا۔میں ان کے قریب گیا تو انہوں نے اپنے ایک ساتھی کی طرف اشارہ کیا کہ اسے آگے چھوڑ دینا۔ میں نے کہا کہ سیٹ پر سامان کےسبب جگہ نہیں،اس لئے معذرت خواں ہوں۔انہوں نے کہا کہ ٹھیک ہے، آپ جا سکتے ہیں۔

صبح9:00بجے حیدر آباد پہنچا۔ موٹروے سے نیشنل ہائی وے (N-5)پر آگیا۔ ایک ہوٹل پر چائے نوشی کرکے آگے بڑھا۔10:30بجے ہالا پہنچا۔ ہالا کے آغاز ہی میں بائیں جانب الخدمت سندھ کا آغوش ہوم دکھائی دیا۔وہاں کا دورہ کیا۔یتیم بچوں کی کفالت کا ایک منظم ادارہ دیکھ کر خوشی ہوئی۔تقریبا ًایک گھنٹے وہاں قیام کے بعدوہاں سے نکلا۔قاضی احمد سے چند کلومیٹر قبل نظر آیا کہ ایک خطرناک حادثہ ہوا ہے۔ ایک ٹرک نے مقامی موٹرسائکل سوار کو کچل دیا تھا۔ ہیلمٹ کی اہمیت کا احساس ہوا۔وہاں رکے بغیر آگے بڑھا۔

دن 1:00بجے قاضی احمد پہنچا۔2:00بجےنورپور کے نزدیک نماز اور طعام کے لئے رکا۔3:00بجے مورو کے مقام پر دو بائیکرز ملے ۔ چلتے چلتے ایک نے قریب ہوکر پوچھا کہ کہاں کا قصد ہے ؟تو میں نے بتایا کہ لاہور جا رہا ہوں۔اس نے کہا کہ ہم دونوں اسکردو جا رہے ہیں۔اس نے ساتھ رہنے کا اشارہ کیا۔تقریبا ً15کلومیٹربعد وہ دونوں ایک جگہ سڑک کنارے رکے میں بھی رک گیا۔ سلام ودعا کے بعدانہوں نے بتایا کہ وہ نماز فجر سے قبل کراچی سے نکلے تھے۔قاضی احمد سے قبل حادثہ کے بارے میںانہوں نے کہا کہ موٹرسائیکل سوار جاں بحق ہوگیا تھا۔رات کے قیام کے بارے میں انہوں نے مجھ سے سوال کیا تو میں نے کہا کہ صادق آبادمیں رکنے کا پلان ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ رحیم یار خان میں قیام کریں گے۔ کل کا دن وہیں گزاریں گے پھر آگے بڑھیں گے۔انہوں نے ایک بائیکرگروپ کے بارے میں بتایاکہ وہ مختلف سیاحتی مقام جانے کا پلان کرکے جاتے ہیں۔ ایک باررجسٹریشن فیس ادا کریں اور گروپ میں شامل ہوجائیں۔مجھ سے انہوں نے پوچھا کہ سکھر میں رکو گے تو میں نے کہا کہ بائیک کا آئل وہاں تبدیل کرانے کے لئے رکوں گا۔انہوں نے کہاکہ صادق آباد تک ساتھ چلو۔میں نے کہاکہ میںزیادہ تیز رفتاری سے بائیک نہیں چلاتا، اس لیے اگر آپ کومیری رفتار سست لگے تو آپ آگے بڑھ جائیں۔
چند منٹ کے بعد وہاں سے آگے بڑھے۔ تقریبا آدھے گھنٹے تک ہم ساتھ رہے، پھر وہ نظر نہیں آئے۔5:00بجے خیرپور شہر آیا۔خیرپور کے کھجوروں کے لاکھوں ایکڑ پر پھیلے درختوں سے منظر بڑا ہی خوبصورت نظر آتا ہے۔ سڑک کنارے دستکاری اور کھجور و اچار کے درجنوں اسٹالز نظرآئے۔5:30بجے سکھر کے نزدیک پہنچا۔ پچھلی دفعہ کے راستہ سے ایوب برج پار کرکے سکھر جیل کے نزدیک مکینک شاپ سے بائک کا آئل چینج کروایا۔وہاں سے فارغ ہوکر نکلنے لگا تو مغرب کا وقت ہوگیا۔
جڑواں شہر روہڑی سے گزر کر ہائی وے پہنچ کر نماز ادا کی۔کراچی سے نکلنے سے قبل فیس بک پر کسی دوست نے صادق آباد کے ایک صاحب کا نمبر دیا تھا۔میں نے ان سے 7:00بجے رابطہ کیااور رات قیام کے حوالے سے بات کی۔انہوں نے مشورہ دیا کہ بہتر ہوگا کہ اوباڑومیں قیام کریںکیونکہ تاخیر ہوجائے گی۔وہاں سے نکلا تو ٹھنڈی ہوا محسوس ہوئی۔ احتیاطا شال اوڑھ لی۔9:00 بجے گھوٹکی پہنچا، ایک ہوٹل سے کھانا کھا کر آگے بڑھا۔ رات 10:00اوباڑو پہنچا۔وہاں مدرسہ جامعہ مدینة العلوم میں بقیہ رات آرام کیا۔
نماز فجر کے بعدنکلنے کی تیاری کرنے لگا تو میزبان صاحب چائے بسکٹ لے کر حاضرہوئے۔7:00بجے صبح وہاں سے نکلا۔تھوڑی دیر بعد سندھ پنجاب کی سرحد آگئی جہاں رینجرز کے جوان چاک و چوبند دکھائی دیے۔پنجاب میں داخل ہوتے ہی سرسبز نظاروں میں اضافہ ہوا۔ 8:00بجے صادق آباد شہر آیا۔8:45بجے رحیم یار خان میں داخل ہوا۔وہاں مقامی افراد موٹرسائیکل ، چنگچی پر بکرے لے جاتے دکھائی دیے۔ 9:15بجے شیخ واہسن کا مقام آیا۔ یہاں بکروں کی بڑی منڈی دکھائی دی۔ خان بیلا، جن پورسے ہوتے ہوئے 11:45احمد پور شرقیہ پہنچا۔1:00بجے بہاولپور پہنچا۔ ماہ مارچ کے ٹوور میں رانی محل دیکھا تھا۔1:30بجے ایک چورنگی آئی جہاں سے بائیں جانب ملتان کا راستہ ہے۔وہاں سے آگے چند کلومیٹر بعد طعام کیا۔تھوڑا آگے بڑھا تو دیکھا کہ آگے کٹ پر اچانک ایک بیل گاڑی والا اچانک آگیاجس کی وجہ سے ایمرجنسی بریک لگانا پڑا۔ 3:45بجے خانیوال آیا۔ایک ہوٹل پر چائے پی کر آگے بڑھا۔

شام4:40بجے میاں چنوں پہنچا۔ مغرب کے وقت ہڑپہ پہنچا جو قدیم تہذیبی ورثہ کے حوالے سے مشہور ہے۔6:00بجے ساہیوال پہنچ گیا،وہاں کا مشہور پاور پلانٹ نظر آیا۔7:30بجے اوکاڑہ پہنچا۔8:30بجے پتوکی،9:15بجے پھول نگرپہنچ کر ڈنر کیا۔10:30بجے لاہور کی حدود میں داخل ہوا۔ 10:45بجے منصورہ پہنچ گیا۔اس طرح سفر کا پہلا مرحلہ مکمل ہوا۔ جامع مسجد منصورہ کے دروازے کے نزدیک موٹرسائیکل روکی۔ وہاں حبیب الرحمان صاحب اور بلال وارثی اس وقت موجود تھے۔ وہ دونوں پرتپاک انداز میں ملے اور حوصلہ افزائی کی۔ بائیک پارکنگ میں کھڑی کی۔
قیام گاہ میں جاکر سفری تھکن مٹانے لیٹ گیا۔ تقریبا گھنٹے بعد سوگیا۔نماز فجر کے بعد وحدت روڈ پر ساتھیوں کے ساتھ ناشتہ کیا۔9:00بجے تربیت گاہ کا تلاوت قرآن پاک سے آغازہوا۔تربیت گاہ کے نظام الاوقات مناسب رکھے گئے تھے ۔سارا دن اور رات منصورہ ہی میں گزرے۔26اگست کی رات کو تربیتی پروگرام سے فراغت کے بعداورنج لائن پر دو ساتھیوں کے ساتھ بیٹھا۔ اس میں بیٹھ کر اندازہ ہوا کہ لاہور کراچی سے ترقی کے میدان میں بہت آگے بڑھ چکا ہے۔ انارکلی بازار گئے۔ وہاں سے واپس بذریعہ چنگچی آئے کیونکہ رات 10:00بجے سے صبح 6:00بجے تک اورنج لائن کی سروس بند رہتی ہے۔27اکتوبر کو دوپہر 12:00بجے امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق صاحب کا کلیدی و اختتامی خطاب تھا جس کے بعد 1:00بجے تربیت گاہ ختم ہوئی۔
نماز ظہر و طعام کے بعد آرام کیا۔نماز عصر سے قبل گنگا رام ہسپتال کے نزدیک مکینک کو بائیک دکھائی۔ اس نے چیک کرنے کے بعد اوکے کہا۔ واپس منصورہ آکر نماز عصر ادا کی۔ مغرب کے بعد چائے پینے کے لئے نکلا تو شمس الدین امجد(ڈائریکٹر سوشل میڈیا جماعت اسلامی پاکستان)راستہ میں ملے۔ انہوں نے کہا کہ ہم آپ کو چائے پلاتے ہیں۔ان کے ساتھ ان کے دفتر پہنچا۔ اس موقع پر یحییٰ منصوری بھائی (اکنا کینیڈا)سے بھی ملاقات ہوئی۔چائے نوشی کے تھوڑی دیر بعد نماز عشاءکا وقت آپہنچا۔ نماز کے بعد شمس بھائی اور یحییٰ بھائی کے ساتھ مسجد کے باہر کھڑا تھا کہ امیر جماعت سراج الحق اور نائب امیر حافظ ادریس مسجد سے نکلے۔ شمس بھائی نے انہیںمیرا تعارف کراتے ہوئے بتایا کہ موٹرسائیکل پر تربیت گاہ میںشرکت کے لئے کراچی سے آئے ہیں تو ان دونوں نے میری حوصلہ افزائی کی۔10:30بجے لاہور کے تحریکی دوست حامد کا فون آیاکہ وہ چند منٹ میں پہنچ رہے ہیں۔ وہ آئے ۔ وہ مجھے سیور فوڈ لے کر گئے جہاں ہم نے ڈنر کیا۔ 12:00بجے واپس منصورہ پہنچا۔ سامان پیک کرکے سوگیا۔

فجر کی اذان کے وقت آنکھ کھلی۔ نماز کے بعد سامان موٹرسائکل پر باندھ کرواپسی کے سفر کے لئے منصورہ سے نکلا۔ہائی وے پر پتوکی کے قریب ناشتہ کرکے 9:15بجے اوکاڑہ پہنچا۔11:30میاں چنوں کے نزدیک بائک کا موٹر آئل تبدیل کروایا۔12:30بجے خانیوال پہنچا۔1:30بجے ملتان پہنچا۔ وہاں کا مشہور سوہن حلوہ ایک دکان سے لیا۔نماز ظہر اور طعام کے بعد وہاں سے نکلا۔3:30بجے بہالپور پہنچا۔4:14بجے نورپورنورنگا پہنچا۔ مغرب کے وقت جن پور پہنچا۔عشاءکے وقت رحیم یار خان پہنچ گیا۔ 8:30صادق آباد پہنچ گیا۔ وہاں ایک گیسٹ ہاﺅس میں آرام کے لئے کمرہ لیا جہاں میںنے پچھلے ٹوﺅر کے وقت قیام کیا۔ 9:00بجے کھانا کھا کر تھکن اتارنے بسترپر لیٹ گیا۔کچھ دیر میں آنکھ لگ گئی۔

صبح فجر میں آنکھ کھلی۔ نماز کی ادائیگی کرکے گیسٹ ہاﺅس سے روانہ ہوا۔7:00بجے اوباڑو پہنچا۔8:00پنو عاقل اور 9:00سکھر کراس کیا۔چند کلومیٹر آگے ناشتہ کیا۔ 11:45بجے مورو پہنچا۔12:45بجے قاضی احمد پہنچ گیا۔2:00ہالا کراس کیا۔2:30بجے مٹیاری کے مقام پر نماز جمعہ ادا کی۔ 3:15بجے حیدر آباد پہنچ گیا۔4:30بجے نوری آباد سے آگے بڑھ چکا تھا۔5:15بجے کراچی کی حدود میں داخل ہوا۔ 5:40اپنے گھر پہنچ کر میرا کٹھن سفر مکمل ہوا۔
اس سفر کے کچھ تجربات و تاثرات شیئر کرتا ہوں
٭ اللہ تعالیٰ کا کرم ہے کہ لاہور کی جانب جاتے ہوئے اور واپسی پر مشکلات سے مجھے محفوظ رکھا۔
٭ بذریعہ سڑک اپنی سواری پر سفر کا منفرد لطف محسوس ہوتا ہے۔ذاتی خیال ہے کہ موٹرسائیکل پر مشاہدہ زیادہ بہتر ہوتا ہے۔
٭ نیشنل ہائی وے محفوظ راستہ ہے۔نیشنل ہائی وے پولیس بلاوجہ عوام کو تنگ نہیں کرتی۔
٭ حیدر آباد سے لاہور جاتے ہوئے نیشنل ہائی وے کی سڑک بہتر ہو گئی ہے۔ مارچ میں خیرپور سے اوباڑو تک متعدد مقامات پر سڑک کافی خراب تھی۔
٭ دوران سفرچائے 30سے40روپے میں ملی۔ عام ہوٹلوں پر دال روٹی کھائی تو بل 100سے150روپے تک بنا۔کسی دکان پرکوئی چیز خریدی تو نارمل ریٹ پر ملی۔
٭ دوران سفر سندھ میں کسی جگہ قیام کرو تو گداگر آجاتے ہیں۔پنجاب میں ایسی صورتحال نہیں ہے۔
٭ پچھلے ٹوﺅر اور حالیہ سفر کاایک عجیب وٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍٍ دلچسپ تجربہ رہا کہ کراچی سے صبح جلد نکلو تو رات تقریبا 10:30صادق آبادپہنچتے ہیںاور صادق آباد سے نماز فجر کے بعد نکلو تو وقت مغرب سے پہلے کراچی پہنچ جاتے ہیں۔
٭ موٹرسائیکل پر سوزوکی جی ایس 150پر دو بار لانگ ٹوﺅر کیا۔ سوائے بے آرام سیٹ کے مجھے کوئی اور مسئلہ دکھائی نہیں دیا۔ائر کشن یا سیٹ پر رکشہ کی ٹیوب میں تھوڑی ہوا بھر رکھیں تو بے آرامی نہیں ہوگی۔

شہر شہر کی خبریں

این اے 133 لاہور میں ووٹ کی مبینہ خریداری سازش ہے،رحمت خان وردگ

کراچی ( ویب ڈیسک )تحریک استقلال کےمرکزی صدررحمت خان وردگ نے این اے 133 لاہور میں مبینہ ووٹ خریداری کی ویڈیو کوحکمراں جماعت کی سازش قرار دیتے ہوئے

... مزید پڑھیے

مظفر گڑھ : ٹریفک حادثہ میں 4افراد جاں بحق ، 3زخمی ہوگئے

مظفر گڑھ ( ویب ڈیسک )مراد آباد کے قریب ٹریفک حادثہ، 4افراد جاں بحق ، 3زخمی ہوگئے ۔

... مزید پڑھیے

صدر الخدمت فاؤنڈیشن پاکستان کا” آغوش ہوم “ کادورہ ،یتیم بچوں میں گھل مل گئے

  کراچی( نمائندہ رنگ نو) الخدمت فاؤنڈیشن پاکستان کے صدر محمد عبد الشکور کا گلشن معمار میں الخدمت کے نو تعمیرشدہ” آغوش ہوم “کا دورہ

... مزید پڑھیے

تعلیم

وفاق نے رواں سال تعلیمی اداروں میں مکمل نصاب بحال کرنے کااعلان کردیا (تعلیم)

اسلام آباد (تعلیم ڈیسک)حکومت نے رواں سال تعلیمی اداروں میں مکمل سلیبس بحال کرنے کااعلان کردیا

...

... مزید پڑھیے

جامعہ کراچی : تعلیمی سیشن 2022 کے داخلوں کی کی منظوری دے دی گئی (تعلیم)


کراچی (تعلیم ڈیسک):جامعہ کراچی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹرخالد محمودعراقی کی زیر صدارت جمعرات کے روز کلیہ فنون وسماجی علوم جامعہ کراچی کی سماعت گاہ میں

... مزید پڑھیے

گورنمنٹ نیوعلی گڑھ پوسٹ گریجویٹ کالج ٹنڈوآدم میں یومِ اقبال کی تقریب (تعلیم)

ٹنڈوآدم ( نمائندہ رنگ نو ڈاٹ کام ) گورنمنٹ نیو علی گڑھ پوسٹ گریجویٹ کالج ٹنڈوآدم میں یومِ اقبال کی پر وقار تقریب منعقد کی گئی

...

... مزید پڑھیے

کھیل

پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان پہلا ٹیسٹ 26نومبر سے شروع ہو گا

چٹاگانگ (اسپورٹس ڈیسک)پاکستان اور بنگلہ دیش کی کرکٹ ٹیموں کے درمیان 2 ٹیسٹ میچز پر مشتمل سیریز کا پہلا میچ 26 نومبر سے ظہور احمد

... مزید پڑھیے

جونیئر ہاکی ورلڈ کپ،قومی ہاکی ٹیم 20نومبر کو بھارت روانہ ہو گی

لاہور(اسپورٹس ڈیسک)بھارت میں منعقدہ جونیئر ہاکی ورلڈکپ میں شرکت کے لیے قومی ٹیم کو حکومت کی جانب سے گرین سگنل مل گیا۔ پاکستان ہاکی فیڈریشن کے سیکریٹری

... مزید پڑھیے

پئنز ٹرافی کی میزبانی پاکستان کیلئے فخر اور اعزاز کی بات ہے : رمیز راجہ

لاہور( اسپورٹس ڈیسک )پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیز راجہ نے چیمپئنز ٹرافی کی میزبانی پاکستان کو ملنے پر سماجی رابطےکی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام جاری کرتے

... مزید پڑھیے

تجارت

لاہور: درجہ دوم کے گھی اور کوکنگ آئل کی قیمتوں میں مزید اضافہ

لاہور (ویب ڈیسک ) صوبائی دارالحکومت لاہور کے گھی مافیا نے درجہ دوئم کے گھی اور کوکنگ آئل کی قیمتوں میں 5 روپے فی کلو کا اضافہ کردیا گیا ۔

... مزید پڑھیے

پاکستان کو1 ارب 5 کروڑ 90 لاکھ ڈالر کا قرضہ جاری کیاجائے گا: آئی ایم ایف

اسلام آباد(ویب ڈیسک ،خبر ایجنسی) عالمی مالیاتی ادارے اور پاکستان کے درمیان سٹاف لیول پر قرض کا معاہدہ طے پاگیا ۔عالمی مالیاتی فنڈ

... مزید پڑھیے

ملک میں مہنگائی کی شرح 18 اعشاریہ 34 فیصد کی ریکارڈ سطح پر پہنچ گئی

اسلام آباد(ویب ڈیسک )ملک میں مسلسل مہنگائی میں اضافے کا رجحان برقرارہے رواں ہفتےمہنگائی میں 1.07 فیصد مزید اضافہ ہوگیا ہے۔ ملک

... مزید پڑھیے

دنیا بھرسے

افغانستان کی امداد کیلئے 600 ملین ڈالر کا ہدف مکمل ہوگیا، اقوام متحدہ

جنیوا (ویب ڈیسک )اقوام متحدہ نے اعلان کیا ہے کہ افغانستان کی امداد کیلئے اس کی حالیہ اپیل کا 600 ملین ڈالر کا ہدف مکمل ہوگیا ہے۔میڈیا رپورٹ

... مزید پڑھیے

مذہبی آزادی پر تشویش‘ کی امریکی فہرست میں پاکستان بھی شامل

واشنگٹن (ویب ڈیسک )امریکی وزارتِ خارجہ نے پاکستان کو ان ممالک کی فہرست میں شامل کر دیا ہے جہاں مذہبی آزادی کے حوالے سے خصوصی 

... مزید پڑھیے

رواں سال کا آخری چاند گرہن 19نومبر اور آخری سورج گرہن 4دسمبرکو ہوگا

کوئٹہ (ویب ڈیسک )ماہر فلکیات ڈاکٹر ریاض نے کہا ہے کہ رواں سال کا آخری چاند گرہن 19نومبر بروز جمعہ اور آخری سورج گرہن 4دسمبر بروز ہفتہ ہوگا ۔پاکستان میں یہ دونوں

... مزید پڑھیے

فن و فنکار

زندگی گزارنے کا کوئی مقصد ہونا چاہیے: اداکارہ ثنا

لاہور (شوبز ڈیسک)معروف اکارہ ثنا نے کہا ہے کہ زندگی گزارنے کا کوئی مقصد ہونا چاہیے اور جو لوگ زندگی کو کسی مقصد کے

... مزید پڑھیے

میری ویڈیوز پر محبت ،تنقید اور شہرت بھی ملی: حریم شاہ

لاہور (شوبزڈیسک)ٹک ٹاک اسٹار حریم شاہ نے کہا ہے کہ میرا کوئی پیشہ نہیں ہے، کیونکہ جو میں کرنا چاہتی تھی وہ آج تک

... مزید پڑھیے

پاکستان میں مستقل مزاجی سے فلمیں بنانے کی ضرورت ہے:حریم فاروق

کراچی (شوبز ڈیسک) اداکارہ و ماڈل حریم فاروق نےکہا ہے کہ پاکستان میں مستقل مزاجی سے فلمیں بنانےکی ضرورت ہے، ہمارا سینما کلچر واپس

... مزید پڑھیے

دسترخوان

ڈبہ پیک کھانے

 

عظمیٰ ابونصرصدیقی

حالیہ تحقیق نے ثابت کیا ہے کہ پہلےسے تیارشدہ کھانےنہ صرف موٹاپے کا باعث بنتے ہیں بلکہ یہ صحت کےلیے بھی نقصان

... مزید پڑھیے

اسپائسی فش اسٹکس

قرة العین
اجزا
مچھلی کے فلے۔۔ 500 گرام

... مزید پڑھیے

بلاگ

نسلہ ٹاور گراؤ (بلاک)

  محمد عابد قیوم خان

            نسلہ ٹاور شہر کراچی کی سب سے بڑی اور اہم گزر گاہ یعنی مین شاہراہ فیصل پر واقع ہے جو کہ غیر قانونی تعمیرات میں سے ایک ہے۔

... مزید پڑھیے

حکومت کو ایک اور بحران کا سامنا (بلاک)

افتخار الحسن

ویسے تو گزشتہ چند سالوں سے ملک میں ہر وقت کسی نہ کسی چیز کا بحران رہتا ہے اور اب تو عوام بھی بحرانوں سے تنگ آ چکے کبھی

... مزید پڑھیے

جرائم کےخاتمےکیلئےاسلامی سزائیں ناگزیر (کرن وسیم )

کرن وسیم

بحیثیت مسلمان یہ ہم سب کیلیےلمحہ فکریہ ہے کہ ہمارے ملک میں اسلامی شرعی سزاؤں تک بات کیوں نہیں پہنچنے دی جاتی؟؟ بےتکےاورخودساختہ

... مزید پڑھیے