سات روز میں 25اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا، ادارہ شماریات

اسلام آباد(ویب ڈیسک )مہنگائی بے قابو ہو گئی ، ادارہ شماریات کی جاری کردہ ہفتہ

وار رپورٹ کے مطابق ملک میں ایک ہفتے کے دوران 25 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا، ایک ہفتے کے دوران ملک میں مہنگائی کی اوسط شرح میں 0.55فیصد اضافہ ہواہے ۔
مہنگائی میں اضافہ اشیائے خورونوش کی قیمتوں میں اضافے کے باعث ہوا، چکن، دال چنا، دال ماش، دال مسور کی قیمتوں میں اضافے کے ساتھ ساتھ انڈے، چاول، گھی، چینی، گوشت، تازہ دودھ، دہی بھی مہنگا ہوا ہے،ادارہ شماریات کے مطابق ایک ہفتے کے دوران چکن 20 روپے فی کلو مہنگی ہوئی، چکن کی فی کلو قیمت 225 روپے سے بڑھ کر 245روپے ہوگئی۔
رپورٹ کے مطابق ایک ہفتے کے دوران دال چنا 3 روپے 46 پیسے مہنگی ہوئی ایک ہفتے کے دوران دال ماش اوسطا 4روپے 64 پیسے فی کلو مہنگی ہوئی، ایک ہفتے کے دوران دال مونگ 2روپے، دال مسور ایک روپیہ مہنگی ہوئی،ایک ہفتے کے دوران گھی کی فی کلو اوسط قیمت 2 روپے 10 پیسے اضافہ ہوا، ملک میں گھی کی اوسط فی کلو قیمت 293روپے 75پیسے ہوگئی، 200گرام لال مرچ کی اوسط قیمت میں 6 روپے 64 پیسے اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔
ادارہ شماریات کے مطابق ایک ہفتے کے دوران انڈے کی فی درجن اوسط قیمت 2 روپے 24پیسے بڑھی، ملک میں انڈے کی اوسط فی درجن قیمت 149 روپے روپے پہنچ گئی، ملک میں چینی کی فی کلو اوسط قیمت 94 روپے تک پہنچ گئی۔رپورٹ کے مطابق ایک ہفتے کے دوران 8 اشیا کی قیمتوں میں کمی آئی، ایک ہفتے کے دوران ٹماٹر کی فی کلو اوسط قیمت میں ایک روپے 31 پیسے کمی آئی، آلو 79 پیسے، پیاز 66 پیسے فی کلو سستی ہوئی۔ ادارہ شماریات کے مطابق ایک ہفتے کے دوران چائے، لہسن اور خشک دودھ کی قیمتوں میں بھی معمولی کمی ریکارڈ کی گئی۔
سات یوم کے دوران ایل پی جی گھریلو سلنڈر کی قیمت میں 35 روپے 60 پیسے کمی آئی۔ایک ہفتے کے دوران ملک میں آٹے کے 20 کلو تھیلے کی قیمت میں19 روپے33 پیسے کمی ہوئی، جبکہ کوکنگ آئل، نمک سمیت 18 اشیا کی قیمتوں میں استحکام رہا۔