سچی کہانیاں

خدیجہ اشتیاق

"ساجد کی ماں او ساجد کی ماں ایک گلاس ٹھنڈا پانی دے دے..کھانس کھانس کر گلا خشک ہو گیا ہے" صابر حسین نے ثریا (صابر کی بیوی)

عالیہ زاہد بھٹی

اک عجیب سی ہلچل مچی ہوئی تھی ۔ فضا میں مہکتی ہوئی بریانی کی خوشبو اور دھڑا دھڑ کھنکھناتے ہوئے برتنوں کے بے ہنگم سے شور کے ساتھ

رضوانہ عمران

آ ج دونوں بہنیں بہت خوش تھیں بہت عرصے کے بعد ان کی پھپھو اپنے بچوں کے ساتھ ان کے گھر آ رہی تھیں.ان دونوں بہنوں میں

آسیہ محمد عثمان

شادیوں کا سیزن ہے بھئی۔ تیرا کاروبار تو بہت ہی ذبردست چل رہا ہوگا۔ دن رات سلائی کرو اب تم۔۔۔۔ نازیہ سلائی کرنےمیں مگن تھی ۔بس ہاں ہوں

نزہت ریاض

مہرواومہرو ۔۔۔۔ چاچی کی کرخت أوازاپنے چھوٹے چھوٹے ہاتھوں سے برتن دھوتی مہروکے کانوں میں گونجی اور چائے کا کپ اس کے ہاتھ سےپھسل

عصمت اسامہ

"شوہرمارتا بھی ہےاورخرچہ بھی نہیں دیتا ؟تو کس طرح رہ رہی ہوایسے فضول آدمی کے ساتھ ،چھوڑ کیوں نہیں دیتی؟", بیگم رضیہ

صبا احمد/ حریم ادب

رمضان مہمان صیام اور قیام کا مہینہ ہے۔جو ہم سے تقویٰ کا تقا ضہ کرتا ہےاور وہی گناہوں سےمعافی کی خوشخبری بھی لاتا ہے. جسم وجان کی مال کی زکوٰۃ کا بھی تقاضا کرتا

 طلعت نفیس

بابا یہ والا بلا دلوادیں۔واصف نے بابا کی میلی گھیردار شلوار کا پائنچا کھینچتے ہوئے کہا ۔

Page 1 of 2