ملکی برآمدات میں جولائی کے مقابلے اگست میں چار اعشاریہ ترپن فیصد کی کمی

اسلام آباد: حکومت معیشت میں بہتری کے دوعوے دھرے کے دھرے رہ گئے، ملکی برآمدات میں خاطر خواہ کمی ملکی برآمدات میں

جولائی کے مقابلے اگست میں چار اعشاریہ ترپن فیصد کی کمی ریکارڈ کی گئی ہے جبکہ درآمدات میں پندرہ اعشاریہ تین نو فیصد کااضافہ ہوا جبکہ تجارتی خسارہ 7 ارب 49 کروڑ ڈالر سے تجاوز کرگیا۔ ادارہ شماریات کی جانب سے جاری تجارتی اعدادوشمار کے مطابق جولائی کے مقابلے اگست میں برآمدات میں 4.53 فیصد کمی جبکہ درآمدات میں 15.39 فیصد اضافہ ہواہے۔
ادارہ شماریات کے مطابق اگست 2020 میں برآمدات کا حجم 2 ارب 23 کروڑ ڈالر جبکہ درآمدات کا حجم 6 ارب 46 کروڑ ڈالر تھا، اسی طرح جولائی 2021 میں درآمدات کا حجم 5 ارب 60کروڑ ڈالر رہا۔ تازہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ سال کی نسبت برآمدات 27.59 فیصد اضافے سے 4 ارب 57کروڑ ڈالر اور درآمدات 72.59فیصد اضافے سے 12 ارب 6 کروڑ ڈالر رہیں، تجارتی خسارہ 7 ارب 49کروڑ ڈالر سے تجاوز کرگیا گزشتہ سال برآمدات 3 ارب 58کروڑ ڈالر اور درآمدات 6 ارب 99کروڑ ڈالر ریکارڈ کی گئی تھیں۔
دوسری جانب وزارت تجارت کا کہنا ہے کہ اگست 2021 میں ٹیکسٹائل، گارمنٹس، کاٹن کے کپڑے، چاول، جرسیوں کی برآمدات میں اضافہ ہوا پھل، سبزیوں اور ٹی شرٹس کی برآمدات بھی بڑھیں جبکہ سرجیکل آلات، مچھلی اور متعلقہ مصنوعات، سیمنٹ، ٹینٹس اور لکڑی سے بنی ہوئی اشیاء کی برآمد میں کمی ہوئی امریکہ، برطانیہ، چین، نیدرلینڈز، جرمنی اور اسپین کو پاکستانی برآمدات میں اضافہ ہواجبکہ افغانستان، جنوبی کوریا، انڈونیشیا، سنگاپور اور چیک ریپبلک کو پاکستانی برآمدات میں کمی ہوئی، وزارت تجارت کا کہنا تھا کہ خدمات کی برآمدات میں جولائی 2020 کے مقابلے میں جولائی 2021 میں 6.4 فیصد کا اضافہ ہواجولائی 2021 میں خدمات کی برآمدات 48 کروڑ 30 لاکھ کی رہیں جبکہ جولائی 2020 میں خدمات کی برآمدات 45 کروڑ 40 کی تھیں۔