وزیراعظم عمران خان نے نئے سرکاری نقشے کی منظوری دے دی

اسلام آباد (ویب ڈیسک)وفاقی کابینہ کی منظوری کے بعد وزیراعظم عمران خان نے نئے سرکاری نقشے کی منظوری دے دی۔ نیانقشہ

پاکستان کی جغرافیائی حدود کا تعین کرے گا۔
وزیراعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد عوام سے خطاب کرتے ہوئے نئے نقشے کا اعلان کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ نیا نقشہ اقوام متحدہ میں پیش کیا جائیگا اور کشمیر کے مسئلے کا حل اقوام متحدہ کی قراردادوں میں آٗئے۔
وزیراعظم عمران خان نے دوٹوک اعلان کیا کہ ہماری منزل سری نگر ہے اور یہ نیا نقشہ دنیا بھر میں استعمال کیا جائیگا۔ پاکستان کا نیا سرکاری نقشہ کشمیریوں کے اصولی مؤقف کی تائید جبکہ ہندوستان کے غاصبانہ اقدام کی نفی کرتا ہے۔عمران خان نے کہا کہ نیا نقشہ ملک بھر کے دفاتر، سکولوں، کالجزمیں بھی لگایا جائے گا۔
نئے نقشے کی اپوزیشن اور کشمیری لیڈرشپ نے بھی تائید کی ہے جبکہ نیا نقشہ پاکستانی قوم کی امنگوں اور کشمیر کے لوگوں کے اصولی مؤقف کی ترجمانی اور تائید کرتا ہے۔پچھلے سال 5اگست کوجو ہندوستان نے غاصبانہ اور غیرقانونی قدم اٹھایا تھا اس کی نفی کرتا ہے۔آج سے ہمارا سرکاری پولیٹیکل نقشہ یہ ہوگا۔ یہی نقشہ جامعات، کالجز اور سکولوں میں آیا کرے گا۔
وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پوری قوم اور حکومت کو مبارکباد دیتا ہوں یہ اعزاز اس حکومت کو ملا ہے، انتظامی نقشے تو پہلے بھی آتے تھے،لیکن پہلی بارقوم کے سامنے ایک ایسا نقشہ رکھا گیا ہے، جو قوم کیامنگوں کی ترجمانی کرتا ہے۔آج حکومت پہلی بار کھلم کھلا اپنا مؤقف پیش کررہی ہے، اس سے پہلے بندکمروں میں کشمیریوں کی ترجمانی کی جاتی تھی۔