جموں و کشمیر میں عید الاضحی کے موقع پر نماز عید کی اجازت نہیں ہوگی : بھارتی حکام

سرینگر(ویب ڈیسک،خبر ایجنسی)غیر قانونی طور پربھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیرمیں ڈویژنل کمشنر کشمیرپنڈورنگ کے پول

نے کہا ہے کہ وادی کشمیر میں عید الاضحی کے موقع پرنماز عید کی اجازت نہیں ہوگی۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق پنڈورنگ کے پول نے کہا کہ یہ فیصلہ کورونا وائرس کی وبا کی وجہ سے کیا گیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ عید پر کوئی اجتماعی نماز نہیں ہوگی کیونکہ کسی بھی اجتماع میں زیادہ سے زیادہ 25 لوگوں کو جمع ہونے کی اجازت ہے اوراگر اجتماعی نماز کی اجازت دی گئی تو اس کی تعداد 25 تک محدود کرنا مشکل ہوگا۔
انہوں نے کہا کہ محدود تعداد میں نماز کی اجازت ہوگی جس طرح کورونا وائرس کی دوسری لہر کے عروج پر دی گئی تھی۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کی وبا کوروکنے کے لئے عید کے موقع پر لوگوں کو حکومت اورطبی ماہرین کی طرف سے جاری کی گئی ہدایات پر عمل کرنا چاہیے۔